Follow us:
+(92) 333 3590682

شوہر کا حق

رسولِ خدا ﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ اگر میں کسی کوحکم کرتا کہ کسی کوسجدہ کرے تو عورتوں کوحکم کرتا کہ اپنے شوہروں کوسجدہ کریں، ان حقوق کی وجہ سے جوخدانے ان پر شوہروں کے مقرر فرمائے ہیں۔

اور آپ نے فرمایا کہ اگر شوہر بیوی کو حکم کرے کہ زرد پہاڑ سے کالے پہاڑ کی طرف (پتھر) لے جائے اور کالے پہاڑ سے سفید پہاڑ کی طرف (پتھر) لے جائے تو بیوی کو چاہیے کہ اس پر عمل کرے۔

حضرت ابوہریرہ ؓ فرماتے ہیں کہ رسولِ خدا ﷺ سے کسی نے سوال کیا کہ کون سی عورت بہتر ہے؟ آپ نے فرمایا: وہ عورت کہ شوہر اس کی طرف دیکھے تو خوش کرے ،اور جب وہ حکم کرے تو اس کا کہامانے، اور اپنے نفس کے بارے میں اس کی مخالفت نہ کرے (کہ بغیر اس کی اجازت کے کہیں چلی جائے یاکسی سے آنکھیں ملائے) اور اس کی مرضی کے خلاف اس کے مال میں تصّرف نہ کرے۔

اور رسول اللہﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ تین شخصوں کی نماز مقبول نہیں ہوتی اور ان کی کوئی نیکی اوپر نہیں جاتی:

۔ بھاگا ہواغلام جب تک اپنے مالکوں کے پاس آکر اپنا ہاتھ انکے ہاتھ میں نہ دیدے۔

۔ وہ عورت جس کاشوہر اس پر ناراض ہو۔

حضرت اُمِّ سَلَمَہؓ فرماتی ہیں کہ رسولِ خدا ﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ جوعورت اس حال میں مرگئی کہ اس کاشوہر اس سے راضی تھا تو وہ جنت میں داخل ہوگئی۔

اور ایک حدیث میں ہے کہ آپ نے فرمایا: جب عورت پانچوں وقت کی نماز پڑھے اور رمضان کے روزے رکھے اورا پنی شرمگاہ کومحفوظ رکھے اور اپنے شوہر کی اطاعت کرے توجنت کے جس دروازے سے چاہے جنت میں داخل ہوجائے۔

حضرت ابن عباسؓ کابیان ہے کہ رسولِ خدا ﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ جس کوچار چیزیں مل گئیں اس کودنیا وآخرت کی بھلائی مل گئی۔ وہ چار چیزیں یہ ہیں:

۔ شکر گزار دل۔۔ خدا کاذکر کرنے والی زبان ۔ مصیبت پر صبر کرنے والابدن۔

۔ ایسی بیوی جو اپنے نفس اور شوہر کے مال میں شوہر کی خیانت نہ کرے۔

اور رسولِ خدا ﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ جب شوہر اپنی بیوی کوحاجتِ مخصوصہ (یعنی صحبت) کے لیے بلائے تو اس کوچاہیے کہ اس کے پاس آجائے اگرچہ تنور پر کام کررہی ہو۔

بخاری ومسلم نے روایت کی ہے کہ رسولِ خداﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ جب مرد اپنی بیوی کواپنے بستر پر بلائے اور وہ انکار کردے تو صبح تک اس عورت پر فرشتے لعنت کرتے رہتے ہیں۔

اور ایک روایت میں یہ ہے کہ آپ نے فرمایا کہ خدا کی قسم! جوکوئی مرد اپنی بیوی کو اپنے بستر پر بلائے اور وہ انکار کردے تو خدا اس پر ناراض رہتا ہے جب تک شوہر راضی نہ ہوجائے۔

Share This: